Announcement

Collapse
No announcement yet.

**نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

Collapse
X
  • Filter
  • Time
  • Show
Clear All
new posts

  • **نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

    نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں
    کہ تیری محفل میں آن بیٹھے ہیں

    اک نظر تو اس طرف بھی دیکھو
    اے مہرباں! ہم بھی بیٹھے ہیں

    اپنی مجبوریاں نہ گنوائوں ہمیں
    ہم تو بن کہے مان بیٹھے ہیں

    ٹٹول کے دیک لو سب دلوں کو
    جس قدر بھی صاحباں بیٹھے ہیں

    ایک ہم ہی ہیں جو تیری محفل میں
    بے غرض، بے نشاں بیٹھے ہیں

    اس طرف آگ، اُس طرف بھی آگ
    اور ہم درمیان بیٹھے ہیں

    صرف دوست احباب ہی نہیں مہرو!۔
    اور بھئی کئی بدظن، بد گمان بیٹھے ہیں
    میں نعرہ مستانہ، میں شوخی رندانہ

  • #2
    Re: **نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

    تم کو ذرا خیال بھی رکھنا چاہیے
    فورم پر کئی شیطان بھی بیٹھے ہیں

    یہ مہرو کون ہے





    Comment


    • #3
      Re: **نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

      ہاہاہاہا شیطان کو مجھ سے ڈرنا چاہے میں کیوں ڈروں اُس سے۔۔۔

      مہرو کا نہیں پتہ اور غزل پڑھنے بیٹھ گے۔۔۔۔
      میں نعرہ مستانہ، میں شوخی رندانہ

      Comment


      • #4
        Re: **نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

        بس مہربانی کرکے نقاب کشائی کرڈالو
        ہم جیسے اور بھی مہرو سے انجان بیٹھے ہیں





        Comment


        • #5
          Re: **نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

          مہرو کو کسی کی پروہ نیں۔۔۔ اب یہ نہ کینا کہ پروہ غلط لکھا ہے۔۔۔ ۔
          میں نعرہ مستانہ، میں شوخی رندانہ

          Comment


          • #6
            Re: **نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

            نہیں نہیں بلکل صحیح لکھا ہے

            آپ مہربانی فرما کر
            بتا کیوں نہیں دیتی
            کہ
            یہ مہرو کون ہے





            Comment


            • #7
              Re: **نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

              اس سے ثابت ہویا کہ تم میری غزلوں اور نظموں کو آنکھیں بند کر کے پڑھتے ہو۔۔۔ ورنہ آج یہ نہ پوچھتے۔۔۔ ۔
              میں نعرہ مستانہ، میں شوخی رندانہ

              Comment


              • #8
                Re: **نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

                میں نے تو تمھاری ڈیزائننگ کی ہوئی غزلیں اور نظمیں پڑھی ہیں
                کیا یہ تمھاری غزل ہے





                Comment


                • #9
                  Re: **نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

                  Originally posted by baniazkhan View Post
                  میں نے تو تمھاری ڈیزائننگ کی ہوئی غزلیں اور نظمیں پڑھی ہیں
                  کیا یہ تمھاری غزل ہے
                  :nc:
                  میں نعرہ مستانہ، میں شوخی رندانہ

                  Comment


                  • #10
                    Re: **نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

                    :admin:





                    Comment


                    • #11
                      Re: **نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

                      admin sy darti warti nai mein... :manicure:
                      میں نعرہ مستانہ، میں شوخی رندانہ

                      Comment


                      • #12
                        Re: **نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

                        na daro





                        Comment


                        • #13
                          Re: **نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

                          Originally posted by crystal_thinking View Post
                          نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں
                          کہ تیری محفل میں آن بیٹھے ہیں

                          اک نظر تو اس طرف بھی دیکھو
                          اے مہرباں! ہم بھی بیٹھے ہیں

                          اپنی مجبوریاں نہ گنوائوں ہمیں
                          ہم تو بن کہے مان بیٹھے ہیں

                          ٹٹول کے دیک لو سب دلوں کو
                          جس قدر بھی صاحباں بیٹھے ہیں

                          ایک ہم ہی ہیں جو تیری محفل میں
                          بے غرض، بے نشاں بیٹھے ہیں

                          اس طرف آگ، اُس طرف بھی آگ
                          اور ہم درمیان بیٹھے ہیں

                          صرف دوست احباب ہی نہیں مہرو!۔
                          اور بھئی کئی بدظن، بد گمان بیٹھے ہیں

                          واہ مطلع بہت پسند آیا داد قبول فرمائیے

                          آپ کی تحریر پڑھکر جی چاہا آپ سے کچھ بات چیت کی جائے

                          اک نظر تو اس طرف بھی دیکھو
                          اے مہرباں! ہم بھی بیٹھے ہیں

                          اک نظراسطرف بھی تو دیکھو
                          ہم بھی تو مہربان بیٹھے ہیں

                          یا


                          دیکھیئے اک نظر تو اس جانب
                          ہم بھی توقدردان بیٹھے ہیں

                          یہاں آپ کو قافیہ ہم آواز لگانا چاہئیے

                          اپنی مجبوریاں نہ گنوائوں ہمیں
                          ہم تو بن کہے مان بیٹھے ہیں


                          اس شعر میں بھی نظرِ ثانی کیجئے جیسے کہ

                          اپنی مجبوریاں نہ گنواؤ
                          ہم تو پہلے ہی مان بیٹھے ہیں

                          ٹٹول کے دیک لو سب دلوں کو
                          جس قدر بھی صاحباں بیٹھے ہیں

                          اسے یوں کہیئے

                          دیکھ لیں دل ٹٹول کر سارے
                          جتنے بھی صاحبان بیٹھے ہیں


                          ایک ہم ہی ہیں جو تیری محفل میں
                          بے غرض، بے نشاں بیٹھے ہیں

                          اسے یوں کہیئے
                          Ismail Ajaz (Khayaal)

                          muHabbatoN se muHabbat sameTne waalaa
                          Khayaal aap kee maiHfil meN aaj phir aayaa

                          Comment


                          • #14
                            Re: **نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

                            bohat achi koshish hai mehro:)

                            Comment


                            • #15
                              Re: **نجانے کیا دل میں ٹھان بیٹھے ہیں

                              مہرو سے مجھے پرانی یاد آگئی ویسے تو یہ پیار کا نام ہوتا ہے لیکن اس سے کچھ اچھی یادیں وابستہ ہیں شکریہ
                              یادوں کے ذکر میں یہ کہ دو یہ کو رومانی یادیں نہیں تھیں بس اچھا وقت تھا کم از کم ایسی تنہائی نہی تھی ہلہ گلہ تھا
                              ہے الف و لیلہ سی زندگی درپیش
                              سو جاگتی ہوئی ، اک شہر زاد ہے دل میں

                              Comment

                              Working...
                              X