Announcement

Collapse

Important Information

Assalamo Allaikum

Pegham is being relocated from it's current hosts to another host. This will disrupt services, until the new setup is ready.

The new setup will be a changed one: A new face and a new site, with forum as it is. So stay tuned and see the new site.

Admin
See more
See less

Bano qudsia quotes - بانو قدسیہ کے اقوال

Collapse
X
  • Filter
  • Time
  • Show
Clear All
new posts

  • #16


    بتاو قیوم محبت کہاں ملتی ہے ۔۔۔ کن کو ملتی ہے ۔۔۔ میں اسے کیا بتاتا ۔۔۔

    راجہ گدھ

    Comment


    • #17


      میں تو خود بچپن سے محبت کی تلاش میں سَرکرداں رہا تھا ---- مجھے کیا معلوم تھا کہ محبت کہاں ملتی ہے، کن کو ملتی ہے اور کن وجوہات پر ملتی ہے ----

      راجہ گدھ

      Comment


      • #18


        میں تو خود بچپن سے محبت کی تلاش میں سَرکرداں رہا تھا ---- مجھے کیا معلوم تھا کہ محبت کہاں ملتی ہے، کن کو ملتی ہے اور کن وجوہات پر ملتی ہے ----

        راجہ گدھ

        Comment


        • #19


          تعلق تو چھتری ہے ۔۔۔۔ ہر ذہنی ، جسمانی ، جذباتی غم کے آگے اندھا شیشہ بن کر ڈھال کا کام دیتی ہے ۔۔۔۔

          بانو قدسیہ
          حاصل گھاٹ

          Comment


          • #20


            انسان کو تحقیق اور خواب سے برابر کی محبت ہے ۔۔۔۔ اور وہ اِن دونوں کے درمیان جُھولے کی مانند آتا جاتا ہے ۔۔۔۔

            بانو قدسیہ

            Comment


            • #21


              محبت سفید لباس میں ملبوس عمرو عیار ہے ۔۔۔۔ ہمیشہ دو راہوں پر لا کھڑا کر دیتی ہے ۔۔۔۔

              راجہ گدھ

              Comment


              • #22


                اِنسان حاصل کی تمنا میں لاحاصل کے پیچھے دوڑتا ہے اُس بچے کی طرح جو تتلیاں پکڑنے کے مشغلے میں گھر سے بہت دور نکل جاتا ہے ، نہ تتلیاں ملتی ہیں نہ واپسی کا راستہ ۔۔۔

                حاصل گھاٹ

                Comment


                • #23


                  جوگ کا پہلا قدم تب اُٹھے گا جب غصے کو ختم کرے گا ۔۔۔ غرور تکبر راکھ بنا کر حکم حکومت داؤ پر لگا دے گا ۔۔۔ یہ رنگ اتار پھینک ' پھر جوگ کی سوچنا ۔۔۔

                  اشفاق احمد
                  (من چلے کا سودا)

                  Comment


                  • #24
                    محبت پانے والا کبھی اس بات پر مطمئن نہیں ہو جاتا کہ اُسے ایک دن کے لیے مکمل طور پر ایک شخص کی محبت حاصل ہوئی تھی ۔۔۔ محبت تو ہر دن کے ساتھ اعادہ چاہتی ہے ۔۔۔

                    راجہ گدھ

                    Comment


                    • #25

                      انسان کو تحقیق اور خواب سے برابر کی محبت ہے ۔۔۔۔ اور وہ اِن دونوں کے درمیان جُھولے کی مانند آتا جاتا ہے ۔۔۔۔

                      بانو قدسیہ

                      Comment


                      • #26


                        اِنسان حاصل کی تمنا میں لاحاصل کے پیچھے دوڑتا ہے اُس بچے کی طرح جو تتلیاں پکڑنے کے مشغلے میں گھر سے بہت دور نکل جاتا ہے ، نہ تتلیاں ملتی ہیں نہ واپسی کا راستہ ۔۔۔

                        حاصل گھاٹ

                        Comment


                        • #27

                          محبت پانے والا کبھی اس بات پر مطمئن نہیں ہو جاتا کہ اُسے ایک دن کے لیے مکمل طور پر ایک شخص کی محبت حاصل ہوئی تھی ۔۔۔ محبت تو ہر دن کے ساتھ اعادہ چاہتی ہے ۔۔۔

                          راجہ گدھ

                          Comment


                          • #28


                            میں جس پاگل پَن کا ذکر کر رہا ہوں وہ میر تقی میر کا پاگل پَن ہے ۔۔۔ فرہاد کا پاگل پَن ہے ۔۔۔
                            پروفیسر سہیل تو دیوانے پَن کی ایک سائیڈ دکھا رہے تھے ۔۔۔ خودکشی اور موت ۔۔۔۔ میں دوسری سائیڈ پیش کر رہا ہوں ، جہاں پہنچ کر دیوانہ پَن مقدس ہو جاتا ہے ۔۔۔۔ ماونٹ ایورسٹ فتح کر لیتا ہے ، دودھ کی نہریں بہا دیتا ہے ۔۔۔

                            راجہ گدھ

                            Comment


                            • #29
                              بانو قدسیہ

                              میں نے انسان کو شہر بساتے اور حق مانگتے دیکھا ہے۔۔۔ جان لو صاحبو! جب کبھی سڑک بنتی ہے اس کے دائیں بائیں کا حق ہوتا ہے، جو مکان شہروں میں بنتے ہیں باپ کے مرتے ہی وارثوں کا حق بن جاتے ہیں۔ میرے ساتھ چلو اور چل کر دیکھو جب سے انسان نے جنگل چھوڑا ہے اس نے کتنے حق ایجاد کر لیے ہیں۔ رعایا اپنا حق مانگتی ہے، حکومت کو اپنے حقوق پیارے ہیں، شوہر بیوی سے اور بیوی شوہر سے حق مانگتی ہے، استاد شاگرد سے اور شاگرد استاد اپنا حق مانگتا ہے۔اصلی حق کا تصور اب انسان کے پاس نہیں رہا، کچھ مانگنا ہے تو اصلی حق مانگو۔۔۔ جب محبت ملے گی تو پھر سب حق خوشی سے ادا ہونگے، محبت کے بغیر ہر حق ایسے ملے گا جیسے مرنے کے بعد کفن ملتا ہے


                              راجہ گدھ

                              Comment

                              Working...
                              X